عنوان: کیا عورت حج بدل کر سکتی ہے؟(106209-No)

سوال: مفتی صاحب! میری بیوی اپنے والد کی طرف سے حج بدل کرنا چاہتی ہے، سوال یہ ہے کہ کیا عورت حج بدل کرسکتی ہے یا حج بدل کے لئے مرد ہونا ضروری ہے؟

جواب: واضح رہے کہ عورت اگر حج بدل کرنا چاہے، تو کرسکتی ہے، بشرطیکہ وہ اپنے خاوند یا محرم کے ساتھ حج بدل کے لئے جائے، البتہ بہتر یہ ہے کہ مرد کو حج بدل کے لئے بھیجا جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الھندیۃ:

وفي الكرماني الأفضل أن يكون عالما بطريق الحج وأفعاله، ويكون حرا عاقلا بالغا، كذا في غاية السروجي شرح الهداية
ولو أحج عنه امرأة أو عبدا أو أمة بإذن السيد جاز ويكره هكذا في محيط السرخسي

(ج: 1، ص: 257، ط: دار الفکر)


واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 308
kai orat hajj e badal karsakti hai?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © AlIkhalsonline 2021.