عنوان: غریب شخص کے حج کرنے کے بعد مالدار ہونے کی صورت میں کیا دوبارہ حج کرنا ضروری ہے؟(106237-No)

سوال: اگر کوئی شخص غریب ہو، اور وہ کسی سے قرضہ لے کر حج پر چلا جائے، اور پھر بعد میں وہ شخص مال دار ہوجائے، تو کیا مالدار ہونے کے بعد اس پر دوبارہ حج ادا کرنا ضروری ہے؟

جواب: اگر کوئی شخص غریب ہو، اور وہ کسی طرح مکہ مکرمہ پہنچ کر حج ادا کرلے، تو اس کے ذمہ سے حج ادا ہوجائے گا، اس کے بعد مالدار ہونے کی صورت میں اس پر حج کے لئے دوبارہ جانا فرض نہیں ہوگا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی مجمع الانھر:

ولو حج الفقير ثم استغنى لم يحج ثانيا؛ لأن شرط الوجوب التمكن من الوصول إلى موضع الأداء ألا ترى أن المال لا يشترط في حق المكي

(ج: 1، ص: 260، ط: دار احیاء التراث العربی)


واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 273
ghareeb shakhs kay hajj karne kay baad maaldar honay ki soorat mai kia dobara hajj karna zaroori hai?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage)

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com