عنوان: کیا صدقے کے بکرے سے خود کھا سکتے ہیں؟(6240-No)

سوال: میری بیٹی کی شادی ہے اور میری زوجہ بھی بیمار ہے، اب اگر میں بکراذبح کرتا ہوں، اس نیت سے کہ بیوی ٹھیک ہوجائے اور شادی بھی خیریت سے ہوجائے، تو کیا میں خود اس سے کھا سکتا ہوں؟

جواب: بیٹی کی شادی اور زوجہ کی بیماری کی وجہ سے بکرا ذبح کرنا جائز ہے، لیکن محض ذبح کرنے سے صدقہ ادا نہیں ہوگا، بلکہ فقراء اور مساکین کو دینے سے صدقہ ادا ہوگا، لہذا جتنا گوشت فقراء اور مساکین کو تقسیم کریں گے وہ صدقہ ہوجائے گا، اور جو گھر میں استعمال ہوگا، وہ صدقہ نہیں ہوگا، البتہ اگر نذر مانی ہوئی تھی تو اس پورے بکرے کو تقسیم کرنا ضروری ہے، اس میں سے نہ گھر والے کھا سکتے ہیں نہ مالدار لوگ کھا سکتے ہیں۔
صدقہ کے لیے بکرا ہی ذبح کرنے کو ضروری نہیں سمجھنا چاہیے، بلکہ صدقے میں بہتر یہ ہے کہ فقراء اور مساکین کی ضرورت کا خیال رکھا جائے، جس چیز کی ان کو ضرورت ہو، وہ چیز دیدی جائے یا رقم دیدی جائے، جس سے وہ اپنی ضروریات کو پورا کر سکے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

بدائع الصنائع: (224/4)
ثم کل دم یجوز أن یأکل منہ لا یجب علیہ أن یتصدق بہ بعد الذبح۔

حاشیة الطحطاوی علی مراقی الفلاح: (باب شروط الصلاة و أركانها، ص: 216، ط: دار الكتب العلمية)
ثم إنه إن جمع بين عبادات الوسائل في النية صح، كما لو اغتسل لجنابة وعيد وجمعة اجتمعت ونال ثواب الكل، وكما لو توضأ لنوم وبعد غيبة وأكل لحم جزور، وكذا يصح لو نوى نافلتين أو أكثر، كما لو نوى تحية مسجد وسنة وضوء وضحى وكسوف، والمعتمد أن العبادات ذات الأفعال يكتفي بالنية في أولها ولا يحتاج إليها في كل جزء اكتفاء بانسحابها عليها، ويشترط لها الإسلام والتمييز والعلم بالمنوى، وأن لا يأتي بمناف بين النية والمنوي".

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1456 Dec 19, 2020
kia sadqay kay bakray say khud kha saktay hain?, Can we eat from charity goat?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Zakat-o-Sadqat

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.