عنوان: حج تمتع کرنے والے کے لئے حج کے دنوں میں عمرہ کرنے کا حکم(106347-No)

سوال: جس شخص نے تمتع کا احرام باندھ رکھا ہو، اور وہ عمرہ کرچکا ہو، اور ابھی حج کی ادائیگی میں دن باقی ہوں، تو کیا وہ حج کی ادائیگی سے پہلے نفلی عمرہ کرسکتا ہے؟

جواب: حج تمتع کرنے والا عمرہ کے طواف، سعی اور حلق یا قصر کرکے فارغ ہونے کے بعد حج کی ادائیگی سے پہلے شوال، ذی القعدہ اور ذی الحجہ کی سات تاریخ تک، جتنے چاہے عمرہ کرسکتا ہے، اس میں اس کے لئے کوئی قباحت یا کراہت نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی غنیۃ الناسک:

وما في اللباب : ولايعتمر قبل الحج ، فغير صحيح؛ لأنه بناء على أن المکی ممنوع من العمرية المفردة ، وهو خلاف مذهب أصحابنا جميعا ؛ لأن العمرة جائزة في جميع السنة بلاكراهة إلا في خمسة أيام ، لا فرق في ذلك بين المكي والآفاقی .

(ص: 215، ط: ادارۃ القرآن)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Print Full Screen Views: 440
hajj e tamattu karne walay kay liye hajj kay dino mai umra karne ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.