عنوان: حج کی قسمیں (106838-No)

سوال: مفتی صاحب! حج تمتع، افراد اور حج قران میں کیا فرق ہے؟ وضاحت فرمادیں

جواب: حج کی تین اقسام ہیں:

1۔حج قران:

اشہر حج میں ایک ہی احرام سے عمرہ اور حج اس طرح ادا کرنا کہ دونوں کے درمیان احرام اتار کر حلال نہ ہو، یعنی عمرہ ادا کرنے کے بعد حلق یا قصر نہ کیا جائے، اور حالت احرام میں رہتے ہوئے ایام حج کا انتظار کیا جائے، اور پھر اسی احرام سے حج ادا کرکے حلال ہو جائے، اس حج میں دم شکر (حج کی قربانی) واجب ہوتا ہے۔

حج قران حج تمتع اور حج افراد سے افضل ہے۔

2۔حج تمتع:

اشہر حج میں عمرہ اور حج اس طرح ادا کرنا، کہ دونوں کے درمیان احرام اتار کر حلال ہوجائے، یعنی عمرہ ادا کرنے کے بعد حلق یا قصر کرکے حلال ہو جائے اور احرام اتار دے، اور پھر ایام حج آنے پر دوبارہ حج کی نیت سے احرام باندھے، حج تمتع میں بھی دم شکر (حج کی قربانی) واجب ہوتا ہے۔

حج تمتع حج افراد سے افضل ہے۔

3۔ حج افراد:
اشہر حج میں صرف حج کی ادائیگی کے لیے احرام باندھنا اور عمرہ ادا نہ کرنا حج افراد کہلاتا ہے، حج افراد میں دم شکر (حج کی قربانی) واجب نہیں ہوتا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

قال صاحب الاھدایہ:

القران افضل من التمتع و الافراد، و صفتہ القران ان یھل بالعمرۃ و الحج معا من المیقات، و یقول عقیب الصلاۃ "اللھم انی ارید الحج و العمرۃ، فیسرھما لی و تقبلھما منی۔

(ج: 1، ص :279، ط: مکتبہ رحمانیہ)

و قال ایضاً:

التمتع افضل من الافراد، و صفتہ ان یبتدی من المیقات فی اشھر الحج، فیحرم بالعمرۃ ویدخل مکۃ، فیطوف لھا، و یسعی لھا، و یحلق او قیصر و قد حل من عمرتہ و یقطع التلبیۃ اذا ابتدأ بالطواف، ویقیم حلالا، فاذا کان یوم الترویۃ احرم بالحج من المسجد و فعل ما یفعلہ الحاج المفرد۔

(ج: 1، ص :283، ط: مکتبہ رحمانیہ)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 150
hajj ki qismain

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © AlIkhalsonline 2021.