عنوان: کیا حج و عمرہ سے فارغ ہونے کے بعد مکہ مکرمہ میں خرید و فروخت کرسکتے ہیں؟(6978-No)

سوال: مفتی صاحب ! مجھے یہ بتادیں کہ اگر کوئی شخص حج یا عمرہ کے لئے جائے اور حج یا عمرہ کے افعال سے فارغ ہو کر مکہ مکرمہ میں خرید و فروخت کرے، تو کیا ایسا کرنا جائز ہے؟

جواب: مکہ مکرمہ میں حج و عمرہ سے فارغ ہونے کے بعد خرید و فروخت کرنا جائز ہے، البتہ بہتر یہ ہے کہ حج و عمرہ کا مبارک سفر خرید و فروخت یا تجارت کرنے کی نیت سے نہ کیا جائے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الفقہ الاسلامی و ادلتہ: (2409/3، ط: دار الفکر)
التفرغ للعبادة والإخلاص: يستحب أن يتفرغ للعبادة، خالياً عن التجارة؛ لأنها تشغل القلب، فإن اتجر مع ذلك صح حجه، لقوله تعالى: {ليس عليكم جناح أن تبتغوا فضلاً من ربكم} [البقرة:198/ 2]۔۔۔الخ

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 1648 Mar 02, 2021
kia hajj or urmay say faarigh honay kay baad makka mukarrama mai khareed or farookht kar saktay hain?, Can we buy and sell in Makkah after completing Hajj and Umrah?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage) & Umrah

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2024.