عنوان: حفظ کے طالب علم کا اپنے نام کے ساتھ "حافظ" لکھنا(107025-No)

سوال: مفتی صاحب ! میں حفظ قرآن کا طالب علم ہوں اور اس کے ساتھ میں ایک یونیورسٹی کا طلب علم بھی ہوں، کیا میں اپنے نام کیساتھ حافظ لکھ سکتا ہوں؟ اوراگر کوئی پوچھے کہ کیا آپ حافظ ہو تو میں کیا جواب دوں؟

جواب: عرف عام میں "حافظ" اسے کہا جاتاہے٬ جس نے مکمل قرآن کریم حفظ کرلیا ہو٬ آپ چونکہ ابھی حفظ کر رہے ہیں٬ اس لئے اپنے نام کے ساتھ "حافظ" نہیں لکھنا چاہئے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


لما فی الدر المنثور في التفسير بالمأثور :

"وأخرج عبد بن حميد وابن جرير وابن المنذر عن أبي صالح قال: قال المسلمون: لو أمرنا بشيء نفعله فنزلت {يا أيها الذين آمنوا لم تقولون ما لا تفعلون} قال: بلغني أنها نزلت في الجهاد كان الرجل يقول: قاتلت وفعلت ولم يكن فعل فوعظهم الله في ذلك أشد الموعظة.
وأخرج ابن مردويه عن ابن عباس قال: كان رسول الله صلى الله عليه وسلم يبعث السرية فإذا رجعوا كانوا يزيدون في الفعل ويقولون قاتلنا كذا وفعلنا كذا فأنزل الله الآية"

(8/ 147ط.دارالفکر بیروت)

و اللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 235
hifz kay taalib e ilm ka apnay name kay sath haafiz likhna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Miscellaneous

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.