عنوان: کسی شخص کو زکوٰۃ دینے کے بعد پتہ چلا کہ وہ زکوٰۃ کا مستحق نہیں ہے، تو وہ زکوٰۃ ادا ہو گئی، یا دوبارہ ادا کرنا پڑے گی؟(107428-No)

سوال: مفتی صاحب! ہم نے پچھلے سال ایک خاتون کو زکوۃ دی، اس خاتون نے کہا تھا کہ میں سید نہیں ہوں، لیکن ابھی ہم نے اس کے کارڈ پر سید لکھا دیکھا ہے، معلوم یہ کرنا ہے کہ کیا ہماری پچھلے سال والی زکوۃ ادا ہوگئی یا نہیں؟

جواب: واضح رہے کہ اگر کسی شخص کو غیر سید اور مستحق سمجھ کر زکوٰۃ دی گئی ہو اور بعد میں پتا چلا کہ وہ مستحق نہیں تھا یا وہ سید تھا، تو ایسی صورت میں دوبارہ زکوٰۃ ادا کرنا ضروری نہیں ہے، لہذا صورت مسئولہ میں اگر آپ نے اس کے غیر سیدہ ہونے کی تحقیق کے بعد زکوٰۃ دی تھی اور واقعتا وہ خاتون غیر سیدہ ہے، تب تو آپ کی دی ہوئی زکوٰۃ بلا شبہ ادا ہو گئی ہے، لیکن اگر بعد میں پتا چلا کہ وہ خاتون سیدہ ہے، تب بھی آپ کے لیے دوبارہ زکوٰۃ ادا کرنا ضروری نہیں ہے، کیونکہ مصرف کی تعیین میں تحقیق کی غلطی معاف ہے، بشرطیکہ زکوٰۃ دینے سے پہلے پوری طرح تحقیق کر لی گئی ہو، لیکن اگر تحقیق کے بغیر زکوٰۃ دی اور بعد میں مصرف کی غلطی کا علم ہوا، تو زکوۃ ادا نہیں ہوئی، بلکہ ایسی صورت میں زکوٰۃ دوبارہ ادا کرنا لازم ہوگا۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


لما فی الفتاوى الهندية:

"وإذا دفعها، ولم يخطر بباله أنه مصرف أم لا فهو على الجواز إلا إذا تبين أنه غير مصرف، وإذا دفعها إليه، وهو شاك، ولم يتحر أو تحرى، ولم يظهر له أنه مصرف أو غلب على ظنه أنه ليس بمصرف فهو على الفساد إلا إذا تبين أنه مصرف، هكذا في التبيين".

(الفتاوى الهندية: ١/ ١٩٠)

وفی الدر المختار مع رد المحتار:

"( دفع بتحر ) لمن يظنه مصرفًا ( فبان أنه عبده أو مكاتبه أو حربي ولو مستأمنًا أعادها ) لما مر ( وإن بان غناه أو كونه ذميًا أو أنه أبوه أو ابنه أو امرأته أو هاشمي لا) يعيد؛ لأنه أتى بما في وسعه، حتى لو دفع بلا تحر لم يجز إن أخطأ".

(الدر المختار مع رد المحتار: ٢/٣٥٣)

واللہ تعالیٰ اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 246
kisi shakhs ko zakat dene kay baad pata chala kay wo zakat ka mustahiq nahi hai to wo kia zakat ada hogai ya dobara ada karni paraygi gi?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Zakat-o-Sadqat

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.