عنوان: کیا قادیانی کی کھانے کی دعوت قبول کرسکتے ہیں؟(107476-No)

سوال: میری گلی میں ایک قادیانی رہتا ہے، اس نے کہا ہے کہ وہ میری کھانے کی دعوت کرنا چاہتا ہے، سوال یہ ہے کہ کیا قادیانی کی کھانے کی دعوت قبول کرسکتے ہیں؟

جواب: قادیانی شخص مرتد ہے اور مرتد شخص سے کسی بھی قسم کے تعلقات رکھنا اور اس کی کھانے کی دعوت قبول کرنا شرعاً جائز نہیں ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کما فی الھندیۃ:

إذا ارتد المسلم عن الإسلام والعياذ بالله عرض عليه الإسلام، فإن كانت له شبهة أبداها كشفت إلا أن العرض على ما قالوا غير واجب بل مستحب كذا في فتح القدير ويحبس ثلاثة أيام فإن أسلم وإلا قتل هذا إذا استمهل، فأما إذا لم يستمهل قتل من ساعته ولا فرق في ذلك بين الحر والعبد كذا في السراج الوهاج

(الباب التاسع في أحكام المرتدين، ج: 2، ص: 253، ط: رشیدیہ)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 255
kai qadyani kay khanay ki daawat qubool karsaktay hain?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Prohibited & Lawful Things

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.