عنوان: خوش آمدید کہنے کے لئے کسی کے سامنے سجدہ کرنے کا حکم(107477-No)

سوال: اگر کوئی شخص کسی مہمان رشتہ دار کے آنے کی خوشی میں خوش آمدید کہنے کے لئے سجدہ کرے، تو کیا وہ کافر ہوجائے گا؟

جواب: اگر کوئی مسلمان خوش آمدید کہنے کے لئے کسی کے سامنے سجدہ کرے، تو اس سے وہ کافر تو نہیں ہوگا، کیونکہ اس نے عبادت کے طور پر سجدہ نہیں کیا ہے، البتہ حرام کام کرنے کی وجہ سے سخت گناہ گار ہوگا، اور اس پر توبہ و استغفار کرنا اور آئندہ مذکورہ کام کرنے سے اجتناب کرنا لازم ہوگا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الشامیۃ:

وکذا مایفعلونہ من تقبیل الارض بین یدی العلماء والعظماء فحرام والفاعل والراضی بہ آثمان لانہ یشبہ عبادۃ الوثن وھل یکفر ان علی وجہ العبادۃ والتعظیم کفر وان علی وجہ التحیۃ لا وصار آثما مرتکبا للکبیرۃ۔

(ج: 6، ص: 383، ط: دار الفکر)

وفی الھندیۃ:

من سجد للسلطان علی وجہ التحیۃ او قبل الارض بین یدیہ لایکفر ولکن یأثم لارتکابہ الکبیرۃ ھوالمختار۔

(ج: 5، ص: 368، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com