عنوان: کیا جبرا شراب پینے کی صورت میں حد جاری کی جائے گی؟(107553-No)

سوال: اگر کسی شخص کو جبرا شراب پلائی گئی ہو، تو کیا ایسے شخص پر حدِ شُرب جاری کی جائے گی؟

جواب: اگر کوئی شخص اپنی خوشی سے شراب نہ پیے، بلکہ اکراہ کے طور پر اسے شراب پلادی جائے، تو ایسے شخص پر حدِ شُرب جاری نہیں کی جائے گی، بلکہ حد اس سے ساقط ہو جائے گی۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کما فی بدائع الصنائع:

الحکم الذی یرجع الی الدنیا فی الانواع الثلاثۃ اما النوع الاوّل فالمکرہ علی الشرب لایجب علیہ الحد اذا کان الاکراہ تامًا لان الحد زاجرًا عن المستقبل۔

(کتاب الاکراہ، ج: 7، ص: 178، ط: رشیدیہ)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 126
kia jabran sharab pinay ki soorat mai had jaari ki jayegi?

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Miscellaneous

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.