عنوان: حضور ﷺ جسمانی طور پر معراج پر گئے تھے یا روحانی طور پر؟(107562-No)

سوال: مجھے یہ بتادیں کہ حضور ﷺ جب معراج پر گئے تھے، تو جسمانی طور پر گئے تھے یا روحانی طور پر، براہ کرم وضاحت فرمادیں؟

جواب: جمہور کے نزدیک حضور ﷺ جسمانی طور پر معراج پر گئے تھے، البتہ کچھ حضرات نے بعض آثار کو مد نظر رکھتے ہوئے، یہ تطبیق بیان فرمائی ہے کہ آپ ﷺ معراج پر دو مرتبہ گئے تھے، ایک مرتبہ روحانی طور پر، اور دوسری مرتبہ جسمانی طور پر معراج پر گئے تھے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی القرآن الکریم:
سُبْحٰنَ الَّذِي أَسْرَى بِعَبْدِهِ لَيْلا مِنَ الْمَسْجِدِ الْحَرَامِ إِلَى الْمَسْجِدِ الأقْصَى الَّذِي بَارَكْنَا حَوْلَهُ۔۔۔الخ
(الاسراء، آیت: 1)

وفی روح المعانی:
واختلف ایضا انہ فی الیقظۃ اوفی المنام …وذھب الجمھور الی انہ فی الیقظۃ ببدنہ وروحہﷺ والرویا تکون بمعنی الرؤیۃ فی الیقظۃ کمافی قول الراعی یصف صائدا:

وکبر للرؤیا وھش فؤادہ وبشر قلبا کان جماً بلالہ

……وذھبت طائفۃ …بان الاسراء کان مرتین احداھما فی نومہﷺ قبل النبوۃ …ثم اسری بروحہ وبدنہ بعد النبوۃ قال فی الکشف وھذا ھو الحق بہ یحصل الجمع بین الاخبار۔
(ج: 5، ص: 7)

وفی احکام القرآن للقرطبی:
ھل کان اسراء بروحہ اوجسدہ اختلف فی ذلک السلف والخلف فذھبت طائفۃ الی انہ اسراء بالروح ……وذھب معظم السلف والمسلمین الی انہ کان اسراء بالجسد وفی الیقظۃ وانہ رکب البراق بمکۃ ووصل الی بیت المقدس وصلی فیہ ثم اسری بجسدہ۔
(ج: 10، ص: 208)

وفی التفسیر الکبیر:
اختلف فی کیفیۃ ذلک الاسراء فالاکثرون من طوائف المسلمین اتفقوا علی انہ اسری بجسد رسول اﷲﷺ والاقلون قالوا انہ مااسری الابروحہ ۔
(ج: 20، ص: 148)

وفی المرقاۃ:
فی شرح السنۃ قال القاضی عیاض اختلف الناس فی الاسراء برسول ﷲﷺ فقیل انما کان جمیع ذلک فی المنام والحق الذی علیہ اکثرالناس ومعظم السلف وعامۃ المتاخرین من الفقھاء والمحدثین والمتکلمین انہ اسری بجسدہ۔
(ج: 11، ص: 138)

کذا فی نجم الفتاوی:
(ج: 1، ص: 358)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 183

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com