عنوان: موتی، ہیروں اور جواہرات پر زکوٰۃ(107609-No)

سوال: موتی ہیرے اور جواہرات پر زکوٰۃ فرض ہے یا نہیں؟

جواب: یاد رہے کہ موتی، ہیروں اور جواہرات پر زکوٰۃ واجب نہیں ہے، البتہ اگر موتی، ہیرے اور جواہرات تجارت کی نیت سے خریدے گئے ہوں، اور انکی مالیت خود یا دوسرے اموال کے ساتھ مل کر مقدار نصاب کو پہنچتی ہے، تو ان پر ڈھائی فیصد کے حساب سے زکوٰۃ ادا کی جائے گی، اور اگر یہ تجارت کی نیت سے نہیں خریدے گئے، یا تجارت کی نیت سے تو خریدے گئے ہوں، لیکن انکی مالیت خود یا دوسرے اموال کے ساتھ مل کر نصاب کو نہیں پہنچتی، تو ان پر زکوٰۃ واجب نہیں ہے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کذا فی بدائع الصنائع:

وأما اليواقيت واللآلئ والجواهر فلا زكاة فيها، وإن كانت حليا إلا أن تكون للتجارة كذا في الجوهرة النيرة۔

(ج: 1، ص: 180، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 256
mooti , heeron , or jawahiraat par zakat

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Zakat-o-Sadqat

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.