عنوان: مسلمان کو فاسق یا کافر کہنے کا حکم(107749-No)

سوال: بعض مسلمان دوسروں کو اے فاسق یا اے کافر کہہ کر پکارتے ہیں، ان لوگوں کا کسی مسلمان کو فاسق یا کافر کہہ کر پکارنا کیسا ہے؟

جواب: واضح رہے کہ کسی مسلمان کو اے فاسق ! یا اے کافر ! کہہ کر پکارنا اس کی ہتک اور توہین میں داخل ہے اور کبیرہ گناہ ہے، لہذا کسی مسلمان کو اس طرح کے الفاظ کہنے سے اجتناب کرنا لازم ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی شرح النووی علی مسلم:

عن عبد ﷲ بن مسعود ؓ قال قال رسول ﷲﷺ : سباب المسلم فسوق وقتالہ کفر۔

السب فی اللغۃ الشتم والتکلم فی عرض الانسان بما یعیبہ …معنی الحدیث فسب المسلم بغیر حق حرام باجماع الامۃ وفاعلہ فاسق۔

(ج: 2، ص: 53، ط: دار احیاء التراث العربی)

وفی الشامیۃ:

وعزر الشاتم بیاکافر ……یافاجر یامخنث یاخائن۔

(ج: 4، ص: 69، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 304

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com