عنوان: سندور لگانے کا حکم(107751-No)

سوال: مفتی صاحب ! ہندوستان میں بعض مسلمان دلہنوں کو شادی کے موقع پر سندور لگایا جاتا ہے، سوال یہ ہے کہ مسلمان عورت کے لئے سندور لگانے کا کیا حکم ہے؟

جواب: واضح رہے کہ مسلمان عورتوں کے لئے زیب و زینت میں غیرمسلم عورتوں کا طریقہ اختیار کرنا درست نہیں ہے، اور زیب و زینت کے لئے سندور لگانے میں چونکہ ہندو عورتوں کے ساتھ مشابہت پائی جاتی ہے، لہذا مسلمان عورتوں کو سندور لگانے سے اجتناب کرنا چاہیے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


کما فی سنن الترمذی:

أن رسول الله صلى الله عليه وسلم قال: ليس منا من تشبه بغيرنا، لا تشبهوا باليهود ولا بالنصارى۔۔الخ

(ج: 4، ص: 353، ط: دار الغرب الاسلامی)

وفی سنن أبي داؤد:

عن ابن عمر رضي اللّٰہ عنہما قال: قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم: من تشبہ بقوم فہو منہم۔

(رقم الحدیث:4031، اللباس، باب في لبس الشہرۃ)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 318
sindoor laganay ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Women's Issues

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.