عنوان: حج فرض ہونے کے بعد رقم خرچ ہوجانے/ مرنے سے پہلے حج بدل کی وصیت کا شرعی حکم(107859-No)

سوال: السلام عليكم، کرونا وائرس کی وجہ سے حج کرنے پر پابندی ہے، جن کے اوپر حج واجب ہے، (1) کیا وہ کسی کو حج کرا سکتا ہے؟ (2) کیا حج کی وصیت کرنا لازم ہے؟ (3) اگر وہ پیسے جو حج کے لئے رکھے تھے، وہ خرچ ہو گئے، تو کیا حکم ہے؟

جواب: ( ١,٢,٣) واضح رہے کہ کسی شخص پر ایک مرتبہ حج فرض ہوجانے کے بعد اس کی ادائیگی اس کے ذمہ میں باقی رہے گی، اگرچہ حج کے لیے جمع شدہ رقم خرچ ہوجائے، لہذا اگر مرنے سے پہلے حج کرنے کے اسباب میسر ہوجائیں تو حج ادا کرلے، ورنہ مرنے سے پہلے حجِ بدل کی وصیت کرنا ضروری ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کذا فی الدر المختار وردالمحتار :

(ﺻﺤﻴﺢ) اﻟﺒﺪﻥ (ﺑﺼﻴﺮ) ﻏﻴﺮ ﻣﺤﺒﻮﺱ ﻭﺧﺎﺋﻒ ﻣﻦ ﺳﻠﻄﺎﻥ ﻳﻤﻨﻊ ﻣﻨﻪ۔

(ﻗﻮﻟﻪ : ﺻﺤﻴﺢ اﻟﺒﺪﻥ) : ﺃﻱ ﺳﺎﻟﻢ ﻋﻦ اﻵﻓﺎﺕ اﻟﻤﺎﻧﻌﺔ ﻋﻦ اﻟﻘﻴﺎﻡ ﺑﻤﺎ ﻻ ﺑﺪ ﻣﻨﻪ ﻓﻲ اﻟﺴﻔﺮ، ﻓﻼ ﻳﺠﺐ ﻋﻠﻰ ﻣﻘﻌﺪ ﻭﻣﻔﻠﻮﺝ ﻭﺷﻴﺦ ﻛﺒﻴﺮ ﻻ ﻳﺜﺒﺖ ﻋﻠﻰ اﻟﺮاﺣﻠﺔ ﺑﻨﻔﺴﻪ ﻭﺃﻋﻤﻰ، ﻭﺇﻥ ﻭﺟﺪ ﻗﺎﺋﺪا، ﻭﻣﺤﺒﻮﺱ، ﻭﺧﺎﺋﻒ ﻣﻦ ﺳﻠﻄﺎﻥ ﻻ ﺑﺄﻧﻔﺴﻬﻢ، ﻭﻻ ﺑﺎﻟﻨﻴﺎﺑﺔ ﻓﻲ ﻇﺎﻫﺮ اﻟﻤﺬﻫﺐ ﻋﻦ اﻹﻣﺎﻡ ﻭﻫﻮ ﺭﻭاﻳﺔ ﻋﻨﻬﻤﺎ ﻭﻇﺎﻫﺮ اﻟﺮﻭاﻳﺔ ﻋﻨﻬﻤﺎ ﻭﺟﻮﺏ اﻹﺣﺠﺎﺝ ﻋﻠﻴﻬﻢ، ﻭﻳﺠﺰﻳﻬﻢ ﺇﻥ ﺩاﻡ اﻟﻌﺠﺰ ﻭﺇﻥ ﺯاﻝ ﺃﻋﺎﺩﻭا ﺑﺄﻧﻔﺴﻬﻢ.
ﻭاﻟﺤﺎﺻﻞ: ﺃﻧﻪ ﻣﻦ ﺷﺮاﺋﻂ اﻟﻮﺟﻮﺏ ﻋﻨﺪﻩ، ﻭﻣﻦ ﺷﺮاﺋﻂ ﻭﺟﻮﺏ اﻷﺩاء ﻋﻨﺪﻫﻤﺎ، ﻭﺛﻤﺮﺓ اﻟﺨﻼﻑ ﺗﻈﻬﺮ ﻓﻲ ﻭﺟﻮﺏ اﻹﺣﺠﺎﺝ ﻭاﻹﻳﺼﺎء، ﻛﻤﺎ ﺫﻛﺮﻧﺎ، ﻭﻫﻮ ﻣﻘﻴﺪ ﺑﻤﺎ ﺇﺫا ﻟﻢ ﻳﻘﺪﺭ ﻋﻠﻰ اﻟﺤﺞ،ﻭﻫﻮ ﺻﺤﻴﺢ، ﻓﺈﻥ ﻗﺪﺭ ﺛﻢ ﻋﺠﺰ ﻗﺒﻞ اﻟﺨﺮﻭﺝ ﺇﻟﻰ اﻟﺤﺞ ﺗﻘﺮﺭ ﺩﻳﻨﺎ ﻓﻲ ﺫﻣﺘﻪ، ﻓﻴﻠﺰﻣﻪ اﻹﺣﺠﺎﺝ۔

(ج : 2، ص : 459، ط : دار الفکر)

کذا فی الفتاوی الھندیۃ :

والأفضل للإنسان إذا أراد أن يحج رجلا عن نفسه أن يحج رجلا قد حج عن نفسه، ومع هذا لو أحج رجلا لم يحج عن نفسه حجة الإسلام يجوز عندنا وسقط الحج عن الآمر، كذا في المحيط وفي الكرماني الأفضل أن يكون عالما بطريق الحج وأفعاله، ويكون حرا عاقلا بالغا، كذا في غاية السروجي شرح الهداية.

(ج: 1، ص: 257، ط: دار الفکر)

کذا فیھا ایضاً :

من علیہ الحج اذامات قبل اداۂ من غیروصیۃ یأثم بلاخلاف وان احب الوارث ان یحج عنہ حج وأرجو ان یجزۂ ذٰلک ان شاء اللّٰہ کذا ذکر ابوحنیفۃ رحمہ اللّٰہ تعالیٰ وان مات عن وصیۃ لایسقط الحج عنہ واذا حج عنہ یجوز عندنا۔۔۔الخ

(الفتاوی الھندیۃ، ج : 1، ص : 258، ط : دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 113

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Hajj (Pilgrimage)

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com