عنوان: بے نمازی کے مال اور کمائی کا حکم(108685-No)

سوال: مفتی صاحب ! اگر کوئی نماز نہیں پڑھتا، تو کیا اس کا مال اور روزی حرام ہوتی ہے؟ براہ کرم رہنمائی فرمادیں

جواب: مسلمان کا جان بوجھ کر نماز چھوڑنا بہت بڑا گناہ ہے، قرآن وحدیث میں ایسے شخص کے بارے میں بہت سخت وعیدیں وارد ہوئی ہیں، لیکن اگر اس نے مال کمانے کے لیے شرعاً جائز طریقہ اختیار کیا ہو، تو محض اس کے نماز چھوڑنے کی وجہ سے اس کے مال اور کمائی کو حرام قرار نہیں دیا جائے گا۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


القرآن الکریم:(سورۃالماعون،الایۃ:4،5)
فَوَيْلٌ لِلْمُصَلِّينَ (4) الَّذِينَ هُمْ عَنْ صَلَاتِهِمْ سَاهُونَ (5)

المعجم الأوسط للطبراني:(رقم الحدیث:3348،ط:دارالحرمين،القاھرۃ)
قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم: من ترک الصلاۃ متعمداً فقد کفر جہاراً۔

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 142

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Salath (Prayer)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.