عنوان: سلام کے دوران نظریں ملانے (Eye Contact) کا شرعی حکم(8835-No)

سوال: حضرت ! کیا سلام کرتے وقت آنکھوں سے آنکھیں ملانا ضروری ہے؟

جواب: سلام کے دوران نظریں ملانا (Eye Contact) سلام کے واجبات میں سے نہیں ہے، البتہ سلام کے آداب میں سے ہے٬ کیونکہ اگر بلا وجہ نظریں نہ ملائی جائیں٬ تو عرف عام میں اسے اعراض (پہلو تہی) سمجھا جاتا ہے٬ البتہ اگر عذر ہو، جس کی وجہ سے نظریں ملائے بغیر محض سلام/جواب پر ہی اکتفاء کیا جائے٬ تو اس میں کوئی حرج نہیں ہے۔
لہذا اگر کوئی سلام کرتے ہوئے نظریں نہ ملائے، تو اسے اس پر ٹوکنا ہر گز صحیح نہیں ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

الشمائل للترمذی: (ص: 23، ط: دار احیاء التراث العربی)
واذا التفت التفت جمیعا؛ حافض الطرف؛ نظرہ الی الأرض أطول من نظرہ الی السماء؛ جل نظرہ

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 261
salam ke / kay doran nazren milane "eye contact" ka sharae / sharai hokom / hokum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Characters & Morals

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.