عنوان: جس مارکیٹ میں قادیانی مصنوعات دستیاب ہوں، اس مارکیٹ سے خریداری کرنا(108925-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! امتیاز سپر مارکیٹ میں قادیانیوں کی مصنوعات ہیں، کیا ایسی مارکیٹ سے سودا لینا جائز ہے؟ براہ کرم تسلی بخش جواب عنایت فرمائیں۔

جواب: قادیانی مصنوعات کی خرید و فروخت کرنا، اور ان کے ساتھ دیگر کاروباری تعلقات رکھنا، چونکہ قادیانیت کی تبلیغ میں ایک درجہ تعاون ہے، اس لئے علماء کرام نے سداً للذرائع قادیانیوں کے ساتھ کاروباری معاملات کرنے اور ان کی مصنوعات کے خریدنے سے منع کیا ہے، البتہ جس مارکیٹ میں قادیانی مصنوعات فروخت ہو رہی ہوں، اس مارکیٹ سے غیر قادیانی مصنوعات کا خریدنا جائز ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

القرآن الکریم: (المائدہ، الآیۃ: 2)
وَتَعَاوَنُوْا عَلَى الْبِرِّ وَالتَّقْوٰى ۖ وَلَا تَعَاوَنُوْا عَلَى الْاِثْمِ وَالْعُدْوَانِ ۚ وَاتَّقُوا اللّٰهَ ۖ اِنَّ اللّٰهَ شَدِيْدُ الْعِقَابِo

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 230
jis market me / mein qadyani / ahmadi masnoat dastiyab ho / hon,us market se / say kharidari karna

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Business & Financial

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.