عنوان: اسٹیٹ بینک سے لین دین کرنے کی وجہ سے غیر سودی بینکوں کے منافع کا شرعی حکم(9232-No)

سوال: مفتی صاحب ! غیر سودی یا اسلامی بینک بھی اسٹیٹ بینک سے لین دین کرتے ہیں، جو کہ سود پر کام کرتا ہے، کیا اس پر بھی ان بینکوں سے منافع غیر سودی کہلائے گا؟

جواب: واضح رہے کہ محض اسٹیٹ بینک سے لین دین کرنے کی وجہ سے کوئی معاملہ یا منافع حرام نہیں ہوتا، جب تک اس معاملے میں شرعی اصولوں کی خلاف ورزی نہ پائی گئی ہو، اس لئے اصل معاملہ کو دیکھنا چاہیے کہ اسٹیٹ بینک کے ساتھ غیر سودی بینکوں کے معاملات کس نوعیت کے ہیں۔
اسٹیٹ بینک کا مستند علماء کرام پر مشتمل اپنا ایک شریعہ بورڈ ہے، جو غیر سودی بینکوں کے نگرانی کرتا ہے، اور غیر سودی بینک اسٹیٹ بینک کے ساتھ شرعی اصولوں کے مطابق معاملات سر انجام دیتا ہے، جسے اسٹیٹ بینک کا شریعہ بورڈ دیکھتا ہے۔
لہذا محض اسٹیٹ بینک کے ساتھ لین دین کرنے کی وجہ سے غیر سودی بینکوں کی کمائی سودی نہیں بن جاتی۔
واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی


Print Full Screen Views: 190
state bank se / say lain dain karne ki waja se / say ghair sodi banko / bankon k / kay munafey ka shari hokom / hokum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Business & Financial

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.