عنوان: گھر کی خریداری کے لیے جمع کردہ رقم پر زکوۃ کا حکم(9363-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! گھر لینے کے لیے پیسے جمع کر رہے ہیں، کیا ان پیسوں پر بھی زکوٰۃ ہوگی یا نہیں؟ رہنمائی فرمادیں۔

جواب: جی ہاں ! گھر کی خریداری کے لیے جمع کردہ رقم پر بھی زکوۃ واجب ہوتی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

رد المحتار: (کتاب الزکوٰۃ، 262/2، ط: سعید)

'' إذا أمسكه لينفق منه كل ما يحتاجه فحال الحول، وقد بقي معه منه نصاب فإنه يزكي ذلك الباقي، وإن كان قصده الإنفاق منه أيضاً في المستقبل لعدم استحقاق صرفه إلى حوائجه الأصلية وقت حولان الحول".

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

Print Full Screen Views: 128
ghar / makan ki kharidari k / kay liye jama karda raqam per par zakat ka hokom / hokum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Zakat-o-Sadqat

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.