عنوان: "میری امت کی عمریں ساٹھ اور ستر (سال) کے درمیان ہیں" اس حدیث کی تحقیق(9623-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب! کیا درج ذیل حدیث درست ہے؟
رسول اللہ صلی علیہ وسلم نے فرمایا:ہماری امت کی عمریں ساٹھ اور ستر (سال) کے درمیان ہیں اور تھوڑے ہی لوگ ایسے ہونگے، جو اس حد کو پار کریں گے۔ (ترمذی: 3550)

جواب: سوال میں مذکور حدیث امام ترمذی رحمہ اللّٰہ کی مشہور کتاب "سنن الترمذی" میں مذکور ہے اور اس حدیث کو امام ترمذی رحمہ اللّٰہ نے "حسن غریب" فرمایا ہے، لہذا اس حدیث کو بیان کیا جاسکتا ہے۔
ذیل میں اس حدیث کو مکمل سند، متن اور ترجمہ کے ساتھ ذکر کیا جاتا ہے:
حَدَّثَنَا الْحَسَنُ بْنُ عَرَفَةَ قَالَ: حَدَّثَنِي عَبْدُ الرَّحْمَنِ بْنُ مُحَمَّدٍ الْمُحَارِبِيُّ، عَنْ مُحَمَّدِ بْنِ عَمْرٍو، عَنْ أَبِي سَلَمَةَ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ قَالَ: قَالَ رَسُولُ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ: "أَعْمَارُ أُمَّتِي مَا بَيْنَ السِّتِّينَ إِلَى السَّبْعِينَ، وَأَقَلُّهُمْ مَنْ يَجُوزُ ذَلِكَ".
وقَالَ: هَذَا حَدِيثٌ حَسَنٌ غَرِيبٌ مِنْ حَدِيثِ مُحَمَّدِ بْنِ عَمْرٍو، عَنْ أَبِي سَلَمَةَ، عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ، عَنْ النَّبِيِّ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ، لَا نَعْرِفُهُ إِلَّا مِنْ هَذَا الْوَجْهِ، وَقَدْ رُوِيَ عَنْ أَبِي هُرَيْرَةَ مِنْ غَيْرِ هَذَا الْوَجْهِ.
(سنن الترمذی: أَبْوَابُ الدَّعَوَاتِ عَنْ رَسُولِ اللَّهِ ﷺ/ باب، 5/ 515، رقم الحدیث: (3550)ط: دار الغرب الإسلامي- بیروت)


ترجمہ:
حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: "میری امت کی عمریں ساٹھ اور ستر (سال) کے درمیان ہیں اور ان میں سے بہت تھوڑے ہی لوگ ایسے ہوں گے، جو اس حد کو پار کریں گے۔
واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی


Print Full Screen Views: 54
meri ummat ki umrein / age sath / sixty / 60 se say sattar / senventy / 70 saal k darmyan / darmian hain.is hadees / hadis ki tehqeeq

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Interpretation and research of Ahadees

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.