عنوان: حیض سے پہلے مٹیالے رنگ کے دھبہ کا حکم (107260-No)

سوال: السلام علیکم، مفتی صاحب ! کیا حیض سے پہلے مٹیالے رنگ کا دھبہ لگنے پر نماز پڑھنی جائز ہے؟

جواب: صورت مسئولہ میں مٹیالے رنگ کا دھبہ حیض شمار نہیں ہوگا، بلکہ ایام عادت کے مطابق ہی عورت کا حیض شمار ہوگا، لہذا مٹیالے رنگ کا دھبہ نظر آنے پر نماز پڑھی جائے گی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل

کما فی الحدیث النبوی

حَدَّثَنَا قُتَيْبَةُ بْنُ سَعِيدٍ، ‏‏‏‏‏‏قَالَ:‏‏‏‏ حَدَّثَنَا إِسْمَاعِيلُ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أَيُّوبَ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ مُحَمَّدٍ، ‏‏‏‏‏‏عَنْ أُمِّ عَطِيَّةَ، ‏‏‏‏‏‏قَالَتْ:‏‏‏‏ “كُنَّا لَا نَعُدُّ الْكُدْرَةَ وَالصُّفْرَةَ شَيْئًا”.

(صحیح البخاری باب الحیض حدیث نمبر :326)

کذا فی الفقہ الاسلامی

ولیست الصفرۃ والکدرۃ بعد العادۃ حیضاً لقول ام عطیۃ ؓ کنا لانعد الصفرۃ والکدرۃ بعد الطہرشئیا۔رواہ ابوداؤد والبخاری ولم یذکربعد الطہروالحاکم۔

(الفقہ الاسلامی وادلتہ ج:1 ص:459)

کذا فی التاتارخانیہ

وکان الشیخ ابومنصورالماتریدی ؒمرۃ یقول:فی الصفرۃ اذا رأتہا ابتداء فی زمان الحیض انہا حیض، وأما اذا رأتہا فی زمان الطہرواتصل ذلک بزمان الحیض فانہا لاتکون حیضاً۔ومرۃ یقول:اذا اعتادت المرأۃ ان تری ایام الطہرصفرۃ وایام الحیض حمرۃ فحکم صفرتہا یکون حکم الطہرحتی لوامتدت الطہرہی بہا لم یحکم بہا بالحیض فی شیء فی ھذہ الصفرۃ،وحکمہاحکم الطہرعلی قول اکثرالمشایخ رحمہم اللّٰہ۔

(الفتاوی التاتارخانیۃ ج:1 ص:328)

کذا فی فتاویٰ دارالعلوم زکریا (ج:1 ص:720)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Print Full Screen Views: 268
haiz se pehle matyalay rang ka dhabbay ka hukum

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Women's Issues

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.