عنوان: جنت کے حقیقی وجود کا انکار کرنے والے شخص کا حکم(107345-No)

سوال: اگر کوئی شخص جنت کے حقیقی وجود کا انکار کرے اور جنت اور اس کی نعمتوں کے بارے میں یوں کہے کہ یہ محض نفس کی خوشی اور مسرت کا نام ہے، ایسے شخص کے بارے میں شریعت کا کیا حکم ہے؟

جواب: جنت اور اس کی نعمتیں قرآن کریم کی بہت سی آیات اور بے شمار احادیث سے ثابت ہے، لہذا اگر کوئی شخص یہ عقیدہ رکھے کہ حقیقت میں جنت کا وجود نہیں ہے اور یوں کہے کہ جنت اور اس کی نعمتیں محض نفس کی خوشی اور مسرت کا نام ہے، تو اس صورت میں مذکورہ شخص کافر ہوجائے گا، کیونکہ وہ قرآن کریم کی بہت سی آیات اور بے شمار احادیث کا انکار کرنے والا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی القرآن المجید:

إِنَّ الَّذِيْنَ آمَنُوْا وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ أُولٰئِكَ هُمْ خَيْرُ الْبَرِيَّةِ. جَزَاؤُهُمْ عِنْدَ رَبِّهِمْ جَنّٰتُ عَدْنٍ تَجْرِيْ مِنْ تَحْتِهَا الْأَنْهٰرُ خٰلِدِيْنَ فِيْهَا أَبَدًا رَضِيَ اللهُ عَنْهُمْ وَرَضُوْا عَنْهُ ذٰلِكَ لِمَنْ خَشِيَ رَبَّهُ۔

(سورۃ البینہ: ۷،۹)

وفی المشکوۃ:

عن ابی ھریرۃ ؓ قال قال رسول ﷲﷺ قال ﷲ تعالی اعددت لعبادی الصالحین مالاعین رأت ولااذن سمعت ولاخطر علی قلب بشر ……وعنہ قال قال رسول ﷲﷺ موضع سوط فی الجنۃ خیرمن الدنیا ومافیھا۔

(ج: ، ص: 495)

وفی الھندیۃ:

من انکرالقیٰمۃ او الجنۃ او النار …… یکفر۔

(ج: 2، ص: 264، ط: دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی
Print Full Screen Views: 159

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com