عنوان: کیا "میرا ہر عبادت سے ایمان اٹھ گیا" کہنے سے مسلمان ایمان سے خارج ہو جاتا ہے اور اس کا نکاح ٹوٹ جاتا ہے؟(108216-No)

سوال: اگر کوئی کسی بات پر غصہ میں یہ کہدے کہ "ہر عبادت سے ایمان اٹھ گیا،" کیا اس سے ایمان اور نکاح پر کوئی فرق پڑے گا یا صرف توبہ و استغفار کرنی ہوگی، براہ مہربانی رہنمائی فرمادیں؟ تنقیح: آپ سے وضاحت یہ مطلوب تھی کہ "ہر عبادت سے ایمان اٹھ گیا " سے کیا مراد ہے؟ جواب تنقیح: بیوی کو شوہر اپنی محبت کا یقین دلارہا تھا تو اس نے کہا: کسی بھی چیز پر ایمان ہی نہی رہا اور دیکھ لی محبت، تو شوہر نے کہا کہ اچھا تو پھر اللہ سے مانگو، تاکہ محبت آجائے، تو اس پر بیوی نے کہا کہ میرا تو ہر عبادت سے ایمان اٹھ گیا۔ بیوی نے کہا کہ "میں نے تو آپ سے محبت بھی عبادت سمجھ کے کی ہے" اس نیت سے بیوی نے کہا کہ میرا تو ہر عبادت سے ایمان اٹھ گیا ہے۔

جواب: صورتِ مسئولہ میں اگر آپ کی بیوی کی مذکورہ جملہ میں "ہر عبادت" سے نیت اور مراد "شوہر سے محبت" تھی اور باقی عبادات ذہن میں نہیں تھیں، تو مذکورہ الفاظ کہنے کی وجہ سے آپ کی بیوی ایمان سے خارج نہیں ہوئیں۔

البتہ احتیاط کا تقاضا یہ ہے کہ آپ کی بیوی اپنے ایمان اور نکاح کی تجدید کرلے، نیز مذکورہ الفاظ کہنے پر توبہ و استغفار بھی کرے اور آئندہ اس جیسے الفاظ کہنے سے اجتناب کرے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دلائل:

کما فی الشامیۃ:

والحاصل: أن من تكلم بكلمة للكفر هازلا أو لاعبا كفر عند الكل ولا اعتبار باعتقاده كما صرح به في الخانية ومن تكلم بها مخطئا أو مكرها لا يكفر عند الكل، ومن تكلم بها عامدا عالما كفر عند الكل ومن تكلم بها اختيارا جاهلا بأنها كفر ففيه اختلاف. اهـ.

(ج:4،ص:224،ط:دار الفکر)

وفی الھندیۃ:

إذا كان في المسألة وجوه توجب الكفر، ووجه واحد يمنع، فعلى المفتي أن يميل إلى ذلك الوجه كذا في الخلاصة في البزازية إلا إذا صرح بإرادة توجب الكفر، فلا ينفعه التأويل حينئذ كذا في البحر الرائق، ثم إن كانت نية القائل الوجه الذي يمنع التكفير، فهو مسلم، وإن كانت نيته الوجه الذي يوجب التكفير لا تنفعه فتوى المفتي، ويؤمر بالتوبة والرجوع عن ذلك وبتجديد النكاح بينه وبين امرأته كذا في المحيط.

(ج:2،ص:283،ط:دار الفکر)

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Beliefs

Copyright © AlIkhalsonline 2021. All right reserved.

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com