عنوان: جنابت کی حالت میں نماز پڑھنے کا حکم(108710-No)

سوال: السلام علیکم، اگر کوئی شخص غسل جنابت بھول جائے اور دن بھر کی نمازیں پڑھ لے، تو کیا حکم ہے؟

جواب: جنابت کی حالت میں نماز پڑھنا ناجائز اور سخت گناہ کا کام ہے، لیکن اگر بھولے سے جنابت کی حالت میں نماز پڑھ لی، تو اس پر مواخذہ نہیں ہے، البتہ اس پر توبہ و استغفار کرے، اور اس حالت میں پڑھی گئی نمازوں کو دوبارہ ادا کرے۔

دلائل:

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


مشکوٰۃالمصابیح:(1771/3،رقم الحدیث:6293،ط:المكتب الإسلامي)
وَعَنِ ابْنِ عَبَّاسٍ أَنَّ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ: «إِنَّ اللَّهَ تَجَاوَزَ عَنْ أُمَّتِي الْخَطَأَ وَالنِّسْيَانَ وَمَا اسْتُكْرِهُوا عَلَيْهِ» . رَوَاهُ ابْن مَاجَه وَالْبَيْهَقِيّ

الدرالمختارمع ردالمحتار:(81/1،ط:سعید)
قلت: وبہ ظہر أن تعمد الصلاة بلا طہر غیر مکفر کصلاتہ لغیر القبلة أو مع ثوب نجس،وہو ظاہر المذہب کما فی الخانیة، وفی سیر الوہبانیة:
وفی کفر من صلی بغیر طہارة ... مع العمد خلف فی الروایات یسطر
(قولہ: کما فی الخانیة) حیث قال بعد ذکرہ الخلاف فی مسألة الصلاة بلا طہارة وأن الإکفار روایة النوادر. وفی ظاہر الروایة لا یکون کفرا، وإنما اختلفوا إذا صلی لا علی وجہ الاستخفاف بالدین، فإن کان وجہ الاستخفاف ینبغی أن یکون کفرا عند الکل. اہ

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص،کراچی

واللہ تعالٰی اعلم بالصواب
دارالافتاء الاخلاص، کراچی

Find here answers of your daily concerns or questions about daily life according to Islam and Sharia. This category covers your asking about the category of Salath (Prayer)

Managed by: Hamariweb.com / Islamuna.com

Copyright © Al-Ikhalsonline 2022.